Posted in pencil

حقیقی اخلاق 

کسی کو آگ سے نکالنے کے لیے خود کو آگ میں سے گزارنا پڑتا ہے گھر میں پڑا زائد کھانا دینا آسان ہے۔بات تو تب ہے جب اپنے منہ سے نوالہ نکال کر دے سکو ۔ جب تک خود کو تکلیف نہ پہنچے حقیقی اخلاق ظاہر نہیں ہو سکتے ۔جو  عمل آسانی سے ہو جائے اس پر ثواب کیسا ؟نیکی وہی ہے جو تکلیف اٹھا کر بھی کی جائے ۔اسی سے انسان کے اخلاق کا پتہ چلتا ہے ۔امتحان ضروری ہے ۔۔۔ منہ سے تو ہر  شخص ہی بڑے بڑے  دعوے کر لیتا ہے پتہ اسوقت چلتا ہے جب جان پہ بن آئے ۔

Advertisements

جواب دیں

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s